مسلک اھل حدیث (منظوم تعارف)

ابوالعاص وحیدی شعریات

دین حق کا ترجماں ہے مسلک اھل حدیث
علم دیں کا رازداں ہے مسلک اھل حدیث


جس میں کھلتے ہیں سدا قرآن وسنت کے گلاب
ایسا دلکش بوستاں ہے مسلک اھل حدیث


خوشبوئے قرآن و سنت عام اس سے ہوگئی
وہ مہکتا گلستاں ہے مسلک اھل حدیث


اس میں آثار صحابہ کا ہے دلکش بانکپن
خوبصورت کہکشاں ہے مسلک اھل حدیث


فکر اسلامی کو اس نے بخشی ہے پاکیزگی
دین کا سچا بیاں ہے مسلک اھل حدیث


ہاں روایت اور درایت کا حسیں سنگم ہے یہ
فکر و فن کا ارمغاں ہے مسلک اھل حدیث


کی حفاظت عظمت توحید کی ہر دور میں
ایسا مخلص پاسباں ہے مسلک اھل حدیث


باطنیت سے الگ ہے ظاہریت سے بھی دور
سلفیت کا آستاں ہے مسلک اھل حدیث


دور ہوجاتی ہے اس سے فرقہ بندی کی وبا
باعث امن و اماں ہے مسلک اھل حدیث


ہو پرستش عقل کی یا جہمیت یا اعتزال
سب سے ہی دامن کشاں ہے مسلک اھل حدیث


بدعتوں کی چلچلاتی دھوپ میں اے دوستو
روح افزا سائباں ہے مسلک اھل حدیث


خدمت قوم و وطن میں اس کی ہیں قربانیاں
عظمت ہندوستاں ہے مسلک اھل حدیث


کشتی اسلام کا بے شک محافظ ہے خدا
اور اس کا بادباں ہے مسلک اھل حدیث


تاقیامت اس کی سچائی رہے گی جلوہ گر
ایسی فکر جاوداں ہے مسلک اھل حدیث


جس طریق حق پر شائق جان و دل سے ہے فدا
میرا وہ فکری نشاں ہے مسلک اھل حدیث


شائق بستوی

آپ کے تبصرے

avatar