شریک حیات

شمس الرب خان شعریات

سکوں چین راحت شریکِ حیات

وفاؤں کی مورت شریکِ حیات


تبسم بدن کا خوشی روح کی

ہے لطف وعنایت شریکِ حیات


گنہ سے بچائے محبت پلا کر

ہے عفت کی لذت شریکِ حیات


غریبی کو بدلے امیری سے یہ

غنا کی ضمانت شریکِ حیات


بدن روح ننگے ہیں اس کے بنا

ہے مومن کی خلعت شریکِ حیات


غلیظوں کا ماوی رکھیلوں کا جوہڑ

عفیفوں کی جنت شریکِ حیات


رکھیلوں پہ برسے ہے لعنت سدا

سراپا ہے عزت شریکِ حیات


ہے افزائشِ نسلِ آدم اسی سے

بقا کی حفاظت شریکِ حیات


عطا کرتی اولاد مر مر کے پل پل

مجسم سخاوت شریکِ حیات


جدائی ہے دونوں کی شیطاں کا محور

ہے خصمِ شناعت شریکِ حیات


ہے گھر کی یہ رانی بہارِ دروں ہے

سکوں کی عمارت شریکِ حیات


ملا ہے یہ تحفہ خدا کی طرف سے

ہے جنت کی زینت شریکِ حیات


ملے شمسؔ میں کوئی خوبی تمہیں جو

سبب فی الحقیقت شریکِ حیات


 

7
آپ کے تبصرے

avatar
3000
7 Comment threads
0 Thread replies
0 Followers
 
Most reacted comment
Hottest comment thread
6 Comment authors
ابوالحسن عمریGufran AhmadHamidullahAZIZUR RAHMANکے ایم جوہر خان Recent comment authors
newest oldest most voted
فضل الرحمن
Guest
فضل الرحمن

👌👌👌

کے ایم جوہر خان
Guest
کے ایم جوہر خان
واہ واقعی خوبصورت ہے
AZIZUR RAHMAN
Guest
AZIZUR RAHMAN

Bahot Umdah

Hamidullah
Guest
Hamidullah
بهت خوب
Gufran Ahmad
Guest
Gufran Ahmad
ماشاءاللہ بہت خوب بھائی صاحب اچھی کوشش آج کے اس پرفتن دور میں جہاں لوگ اپنی شریک حیات پر طرح طرح سے ظلم کرتے ہیں آج نے ایک پہل کی کے اللہ سلامت رکھے آمین
ابوالحسن عمری
Guest
ابوالحسن عمری
السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ
ابوالحسن عمری
Guest
ابوالحسن عمری
آپ آپ کے نام پر نظر ثانی کریں