چشم پرنم (بیاد مفتئ جھنڈا نگر)

خبیب حسن مبارکپوری شعریات

(بیاد مفتئ جھنڈا نگر مولانا عبدالحنان فیضی رحمہ اللہ)

ذرہ ذرہ گلشن ہستی کا ہے ماتم کناں

کوئل و بلبل پپیہے، قمریاں محو فغاں


اڑ چکے ہیں اس چمن سےطائران خوشنوا

اجڑا اجڑا، سونا سونا ہوگیا ہے گلستاں


شدت غم میں ہیں ڈوبے آج اہل علم و فن

مفتئ جھنڈا نگر تھے جن کے میر کارواں


محفل علم حدیث مصطفی کے تھے چراغ

آفتاب وماہتاب، نور گستر کہکشاں


سیرت و کردار میں تھے وہ سراپا رہنما

راہ دکھلاتے رہے، خود بن کے وہ روح رواں


کیوں نہ ہو خوں بار غم سے دیدہ اہل چمن

حیف رخصت ہوگیے یہ مرشد و پیر مغاں


اس جہان فانی میں کیا جی لگانا اے حسن

جا چکے سب راہرو باقی ہیں قدموں کے نشاں


 

آپ کے تبصرے

avatar
3000